15

ایل ای ڈی بلب کے حیران کن نقصان کا انکشاف

اب تک ایل ای ڈی بلب کو صرف بجلی کی بچت کے حوالے سے فائدہ مند قرار دیا لیکن حال ہی میں ماہرین نے ان بلب سے پہنچنے والے ایک نقصان اور تکلیف کے بارے میں بھی انکشاف کیا ہے- اس نئے انکشاف میں کہا گیا ہے کہ ایل ای ڈی بلب کے بےپناہ ٹمٹانے کے باعث لوگوں سردرد کی شکایت عام ہوتی جارہی ہے- یہ انکشاف برطانوی ایکسز یونیورسٹی کے ماہرین نے اپنی ایک تحقیق میں کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ صرف 20 منٹ تک ہی یہ بلب جلانے سے نہ صرف لوگوں کا سر چکرانے لگتا ہے بلکہ ان کے سر میں تکلیف بھی شروع ہوجاتی ہے- ماہرین کا کہنا ہے کہ “ عام طور پر ٹیوب لائٹس ٹمٹماہٹ کے ساتھ 35 فیصد تک مدھم ہوجاتی ہیں جبکہ ایل ای ڈی بلبس 100 فیصد تک

100 فیصد تک مدھم ہو جاتے ہیں- ایل ای ڈی بلب کی ٹمٹماہٹ روایتی بلبوں کے مقابلے میں زیادہ مضبوط ہوتی ہے“۔“ یہی وجہ ہے کہ جن افراد کی آنکھوں کو ٹمٹماہٹ برداشت نہیں ہوتی ان کے سر میں درد ہونا شروع ہوجاتا ہے اور چکر آنے لگتے ہیں“-ماہرین کے مطابق یہ ایل ای ڈی بلب فی سیکنڈ چار سو مرتبہ ٹمٹماتے ہیں اور یوں سر میں درد کا امکان بڑھ جاتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں